فواد چوہدری نے ناکامی کا اعتراف کر لیا

راولپنڈی :حکمران جماعت کے رہنما فواد چوہدری نے ناکامی کا اعتراف کر لیا۔
گزشتہ روز حکومت نے شوگر مافیا کے بعد پیٹرول مافیا کے سامنے بھی گھٹنے ٹیک دیے۔ پیٹرولیم کی قیمتوں میں نئے اضافے کے بعد حکومتی وزراء مسلسل دفاع کی کوششیں کر رہے ہیں جن میں شہباز گِل سر فہرست ہیں۔ آج کی اننگز فواد چوہدری نے شروع کی اور وہ جلد ہی ہار مان گئے۔ انھوں نے ناکامی کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم سے 25 روپے تک ڈیفنڈ نہیں ہو رہے۔ یہ الفاظ وزیر سائنس و ٹیکنالوجی کے ہیں جو انہوں نے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر کہے.

حالانکہ اس سے پہلے وہ بہت سے معاملات میں خود کو اور پارٹی کو ڈیفنڈ کرتے رہے ہیں۔ دوسری طرف پیٹرولیم اضافے پر پنجاب اسمبلی میں وزیر اعظم کے استعفیٰ کی قرارداد جمع کرا دی گئی ہے جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ سے وزیراعظم کے قول و فعل کا تضاد سامنے آ گیا ہے لہذا وزیر اعظم کے پاس اب کوئی اخلاقی جواز نہیں بچا۔

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ، مسلم لیگ ن کی ایم پی اے سعدیہ تیمورکی جانب سے وزیراعظم عمران خان کے استعفی کے مطالبہ کی قرارداد پنجاب اسمبلی میں جمع کرادی گئی۔

سعدیہ تیمور کا کہنا ہے کہ حالیہ بجٹ کو وزیر اعظم عمران خان نے ٹیکس فری قرار دیا، پھر مالی سال مکمل ہونے سے قبل ہی پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں غیرمعمولی اضافہ کردیا گیا، اس اقدام سے وزیراعظم کے قول فعل میں تضاد واضح ہوگیا۔ سعدیہ تیمور کا کہنا تھا کہکے قول فعل میں تضاد واضح ہوگیا ہے جس کے بعد ان کے اقتدار میں رہنے کا کوئی جواز نہیں، ایم پی اے سعدیہ تیمور کا کہنا تھا کہ وزیراعظم اپنی عہدے سے استعفی دیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔